Official Web

چین ویکسین کی منصفانہ تقسیم کو فروغ دینے اور ایک مضبوط مدافعتی رکاوٹ قائم کرنے کے لئے مسلسل کوشاں ہے

نوول کورونا وائرس کی وبا اب بھی دنیا میں پھیل رہی ہے۔ اس وبا کی روک تھام کے لئے چین عالمی برادری کی مدد کررہا ہے۔ چین نے 100 سے زائد ممالک بالخصوص ترقی پذیر ممالک کو ویکسین کی  نوے کروڑ سے زائد خوراکیں فراہم کی ہیں اور اس سال دنیا کو ویکسین کی 2 ارب خوراکیں فراہم کرنے کی کوشش کرے گا . چین ہمیشہ بنی نوع انسان کے ہم نصیبمعاشرے کے تصور پر قائم رہا ہے ، ویکسین کو عالمی عوامی مصنوعات بنانے کے اپنے پختہ عزم کو مضبوطی سے پورا کررہا ہے ، اور دنیا بھر میں انسداد وبا  کی جنگ میں عملی اقدامات سےمدد فراہم کررہا ہے۔اس حوالے سے چین کو بین الاقوامی برادری کی طرف سے وسیع تحسین  ملی ہے۔

26 اگست کو ، میکسیکو نے چین کےسائنوفارم گروپ  کی تیار کردہ ویکسین کے ہنگامی استعمال کی منظوری دی۔ اعلامیے میں کہا گیا کہ تجزیے اور تحقیق کے بعد متعلقہ محکموں کو یقین ہے کہ یہ ویکسین معیار ، حفاظت اور تاثیر کے تقاضوں کو پورا کرے گی ۔

چین کی جانب سے کمبوڈیا، لاؤس،روانڈا  سمیت مختلفممالک میں مسلسل ویکسین فراہم کی جا رہی ہے۔

%d bloggers like this: