Official Web

سنکیانگ میں سرکاری عہدوں پر فائز علیحدگی پسندوں کا مجرمانہ سرگرمیوں میں ملوث ہونے کا انکشاف


چھ اپریل کو ، چین کے سنکیانگ ویغور خوداختیار علاقے  کی ایکمیڈیا بریفنگ میں مقامی  عوامی عدالت نے پہلی مرتبہ سرکاریعہدوں پر فائز علیحدگی پسندوں کی مجرمانہ سرگرمیوں کی تفصیلات کاانکشاف  کیا .
شیرزاد  باودون اعلیٰ سرکاری عہدیدار کی آڑ میں  ایک طویلعرصے تک علیحدگی پسندی کی منصوبہ بندی  اور اس پر عمل درآمد میں شریک رہے ہیں۔سنکیانگ کو تقسیم کرنے کے مقصد  کیخاطر  انہوں نے ہوتن کے علاقے میں دہشت گردی، انتہا پسندیاور  علیحدگی پسندی سمیت  تین قوتوںکی امداد و حمایت کیہے۔ 2015 میں ، شیرزاد باودون  سے  اُن کے کردار  کی بناء پرعلیحدگی پسند تنظیم  مشرقی ترکستان اسلامی تحریک نے وعدہ کیاکہ  خود مختاری کے حصول کے بعد انہیں   سنکیانگ کی نامنہاد آزاد مملکتکا رہنماء قرار دیا جائےگا۔
ستار ساود، سنکیانگ کے محکمہ تعلیم کے ڈائریکٹر اور سنکیانگ کےبنیادی تعلیمی نصابی اصلاحاتی گروپ  کے رہنما تھے۔ 2002 کےآغاز میں ، مذکورہ منصب  پر فائز رہتے ہوئے انہوں نے پرائمریاور مڈل اسکولوں کے لئے اقلیتی زبانوں میں نصابی کتب کیتالیف اور اشاعت کی صدارت کی، انہوں نے خاص طور پرمتعدد  علیحدگی پسند افراد کو منتخب کیا اور اقلیتی  زبانوں کی نصابیکتب میں علیحدگی پسندی ، تشدد اور انتہا پسند تصورات شاملکروائے  ۔
مذکورہ دونوں سابق سرکاری عہدیداروں کو قانون کے مطابق سزاسنائی گئی ہے۔