Official Web

چینی صدر شی جن پھنگ کے اہم مضمون “چین میں درمیانے اور طویل مدتی معاشی اور معاشرتی ترقی کی حکمت عملی کے اہم امور” کی اشاعت

چوشیرسالے کے  یکم نومبر کو شائع ہو نے والے شمارے میں چینی  کمیونسٹ پارٹی کی مرکزی کمیٹی کےسیکریٹری جنرل ، چین  کے صدر مملکت اور  مرکزیملٹری کمیشن کے چیئرمین شی جن پھنگ کا اہم مضمونبعنوان  چین میں درمیانے اور طویل مدتی معاشی اورمعاشرتی ترقی کی حکمت عملی کے اہم امورشائع ہو گا۔ 
مضمون میں اس بات پرزور دیا گیا کہ اس وقت دنیاکو موجودہ  صدی کی سب سے بڑی تبدیلی کا سامناہے ۔ ہمارے لئے وبا نہ صرف  ایک بحران ہے بلکہ ایک  بڑی آزمائش بھی ہے۔  اس لئے  ہمیں  زیادہ طویل مدتی حکمت عملی  بنانی چاہیئے تاکہ  اس بحران کوموقع میں تبدیل کرتے ہوئے اعلی معیار کی ترقی  حاصلکی جائے ۔
مضمون میں لکھا گیا ہے کہ  چین کو اندرونی ضروریات کوفروغ دینے کی  حکمت عملی  پر قائم ر ہنا چاہیئے تاکہ پیداوار ، تقسیم ، گردش  اور  کھپت سمیتتمام  شعبوں کو  گھریلو  مارکیٹ  سے منسلک کر کےایک اچھی اندرونی گردش قائم کی جائے، صحتمند گھریلو گردش اوربین الاقوامی  گردش ایک دوسرےکی تکمیل کریں گی۔
مضمون میں لکھا گیا ہے کہ  چین کو  صنعتی چین اورسپلائی چین کو مستحکم اور بہتر بنانا چاہیئے۔  انڈسٹریچین اور سپلائی چین  کا  استحکام بڑے ملک کی معیشتکی  لازمی خوبی  ہے۔ قومی سلامتی سے متعلق  شعبے میں  خود مختار ،  قابل کنٹرول ، محفوظ ،  قابل اعتماد گھریلو  انڈسٹری اور سپلائی نظام  کو قائم کرنا چاہیئے۔
مضمون لکھا گیا ہے کہ  چین کو   شہرکاری کی حکمت عملیکو بہتر   بناتے ہوئے عوام کی جان و سلامتی  اور صحتکو شہروں کی ترقی میں اولین  حیثیت دینی چاہیئے تاکہشہرکاری کے دوران لوگوں کو مرکزی حیثیت حاصلہو  اور شہر وں میں زندگی کو  زیادہ صحتمند، سلامت اور آرام دہ بنایا جاسکے۔ 
مضمون میں لکھا گیاہے کہ   سائنس اور ٹیکنالوجی کی ترقیکو مسئلےاور مقصد  پر  مبنی  بنیاد پر فروغ دینا چاہئے اورسائنسی اور تیکنیکی ان پٹ اور آؤٹ پٹ کے ڈھانچے ، اور جدید سائنسی اور تیکنیکی  تبدیلی کے طریقہ کار کو بہتربنانا چاہیئے۔  انسان اور قدرت کی ہم آہنگی  کے تصورکے تحت  معیشت اور سماج کی ترقی کو   منصوبہ بناناچاہیئے۔