Official Web

سانحہ کرائسٹ چرچ کے شہدا کی تدفین کا آغاز

کرائسسٹ چرچ: سیکڑوں سوگواروں کی موجودگی میں سانحہ کرائسٹ چرچ کے شہدا کی تدفین کا آغازہوگیا۔

نیوزی لینڈ میں سانحہ کرائسٹ چرچ کے شہدا کی تدفین کا آغازہوگیا۔ لین وڈ میموریل پارک میں سیکڑوں سوگواروں کی موجودگی میں دو شہدا خالد مصطفیٰ اور ان کے چودہ سالہ بیٹے حمزہ کی نمازجنازہ ادا کردی گئی۔

دونوں شہدا کی میتیں ایمبولینس میں لین وڈ پارک لائی گئیں۔ نیوزی لینڈ حکومت کی جانب سے تدفین کے موقع پر ورثا کے لئے خصوصی انتظامات کئے گئے جب کہ سیکیورٹی بھی انتہائی سخت رہی۔

دوسری جانب نیوزی لینڈ کی فضا پانچ دن بعد بھی سوگوارہے اورابھی تک شہدا کی تاد میں تعزیتی پھول رکھنے کا سلسلہ جاری ہے۔ امریکی اخبار نیو یارک ٹائمز نے شہدا کی فہرست بھی جاری کر دی ہے۔ شہید ہونے والوں میں پاکستان، بھارت، بنگلادیش، فلسطین، مصر، فیجی، متحدہ عرب امارات، نیوزی لینڈ فٹ بال ٹیم کے کھلاڑی اور نیوزی لینڈ کے شہری شامل ہیں۔

واضح رہے کہ 15 مارچ کو نیوزی لینڈ کے شہرکرائسٹ چرچ میں سفید فام عیسائی دہشت گرد نے دومساجد میں فائرنگ کرکے 50 معصوم مسلمانوں کو شہید اورکئی افراد کو زخمی کردیا تھا جب کہ شہدا میں 9 پاکستانی بھی شامل تھے۔

%d bloggers like this: