Official Web

"ویغور جبری مشقت کی روک تھام کا قانون”بالکل بے بنیاد اور غلط ہے،چینی و غیرملکی ماہرین

وامور ِسنکیانگ ویغور خوداختیار علاقے سےمتعلق منعقدہ پریس کانفرنس میں سنکیانگ بلدیاتی حکومت کے ترجمان شو گوئی شیانگ نے کہا کہ نام نہاد  "ویغور جبری مشقت کی روک تھام کا قانون”امریکہ کی ،طاقت کی سیاست اور بالادستی کا عکاسی ہے جو عالمی قانونی حکمرانی کے ماحول کے لیے شدید نقصان دہ ہے۔
جاپانی پروفیسر یروشی اونیشی  نے سنکیانگ کا دورہ کیا اور ان کی تحقیقات کے مطابق سنکیانگ کے مزدور ایک بہتر زندگی کے لیے ترقی یافتہ ساحلی  علاقے میں کام کرنے گئے ہیں۔
مصر کے سابق نائب وزیر خارجہ علی شیونی نے کہا کہ امریکہ، انسانی حقوق کے  شعبے میں چین کا مبلغ بننے کاہر گز اہل نہیں ہے۔

%d bloggers like this: