Official Web

فالج کےبعد ہاتھوں کی قوت بڑھانے والی ویڈیو گیم جوائے اسٹک

لندن: فالج کے حملے کے بعد اکثر ہاتھوں کی گرفت کمزور ہوجاتی ہے جسے بحال کرنے کے لیے ادویہ اور فزیوتھراپی کرائی جاتی ہے۔ اب ایک ویڈیو گیم اور اس کے لیے ڈیزائن کردہ خاص قسم کا ہینڈل بنایا گیا ہے جو کھیل کھیل میں ہاتھوں کی گرفت بحال کرتا ہے۔

امپیریئل کالج لندن کے ماہرین نے اسے بنایا ہے جسے انہوں ںے ’گرپ ایبل‘ کا نام دیا ہے۔ یہ ہاتھ اور بازو کی حرکات کو بڑھانے والا ایک تربیتی آلہ ہے۔ سامنے ایک گیم کی صورت میں ایپ چلتی رہتی ہے جس کے لحاظ سے ہاتھومیں گرپیبل تھامنا اور اسے گھمانا پڑتا ہے۔ مثلاً ایک گیم میں آلے کو جتنی قوت سے دبایا جائے گا اسکرین پر تیر اتنی ہی دور تک جائے گا۔ اس طرح ورزش کے مراحل گیم کی صورت میں آگے بڑھتے رہتے ہیں اور مریض کی کیفیت بہتر ہوتی جاتی ہے۔

گرپیبل جوائے اسٹک کو دبا کر چھوڑنا پڑتا ہے اور اسی سے گیم کھیلا جاتا ہے۔ بسا اوقات آلے کو دائیں یا پھر بائیں گھمایا جاتا ہے۔ اس طرح کھیل کھیل میں فزیو تھراپی نما ورزش ہوجاتی ہے ۔ جوائے اسٹک ارتعاش سے بھی ہاتھوں کی درست حرکات میں مدد دیتی ہے۔

اگرچہ اس طرح کی ورزشیں کلینک یا ہسپتال میں کرائی جاتی ہیں جس میں ایک ماہر تھراپی کی نگرانی شامل ہوتیہ ے۔ لیکن گریپیبل کی بدولت مریض کسی بھی وقت گھربیٹھے ورزش اور فزیوتھراپی کی تربیت لے سکتا ہے۔ اس طرح لوگ اپنی مرضی کے اوقات میں ورزش کرکے تیزی سے بحالی کی جانب بڑھ سکتے ہیں۔ دوسری جانب گیم شامل کرکے اسے مزید دلچسپ بنایا گیا ہے۔

2019 میں اسے فالج کے 30 مریضوں پرآزمایا گیا جن کے بازو کمزور ہوچکے تھے۔ گرپیبل کی بدولت مریض اوسط دن میں اسے 104 مرتبہ استعمال کررہے تھے جبکہ ہسپتال میں روایتی تھراپی میں وہ اسے صرف 15 مرتبہ ہی انجام دے پاتے تھے۔

اس طرح لوگوں نے اس آلے کو استعمال کرتے ہوئے بہت افاقہ محسوس کیا ہے۔ اس کی تفصیل ایک تحقیقی مقالے میں شائع کی جاچکی ہے جو جرنل برائے نیوروری ہیبلی ٹیشن اور نیورل ریپیئر میں چھپی ہے۔

%d bloggers like this: