Official Web

بیلٹ اینڈ روڈ” سے وابستہ ممالک اور عالمی تنظیموں کی تعداد 172 تک جاپہنچی

تیئیس تاریخ کو چین کی ریاستی کونسل کے انفارمیشن آفس کی ایک پریس کانفرنس میں نائبوزیر تجارت چھین کھہ مینگ نے کہا کہ 2013 سے لے کر اب تک وزارت تجارت نے "بیلٹ اینڈروڈکی مشترکہ تعمیر کو فروغ دینے میں پانچ اہمکامیابیاں حاصل کی ہیں۔اول ، بلا رکاوٹتجارت گہری ہوتی جا رہی ہے ، جس سے وسائلکے موثر بہاؤ اور بہترین تقسیم کو فروغ دیا گیاہے۔ 2013 سے 2020 تک ،چین اور  "بیلٹاینڈ روڈ” سے وابستہ ممالک کے درمیان مصنوعات کی تجارت کا کل حجم نواعشاریہ دو ٹریلین امریکی ڈالر تک پہنچ  چکا ہے۔
دوم ، سرمایہ کاری سے متعلق تعاون کو مزید فروغ دیا جارہا ہےجس سے باہمی مفادات کے تحتصنعتی چین اور سپلائی چین تشکیل دی گئی ہیں۔2013 سے 2020 تک ، بیلٹ اینڈ روڈ سے وابستہ ممالک میں چین کی مجموعی براہ راست سرمایہ کاری 136 بلین امریکی ڈالر تک پہنچ چکی ہے ، اورانممالک کے چین میں نئے قائم ہونے والےکاروباری اداروں کی مجموعی تعداد 27000 تکپہنچ  چکی ہے، جس میں  استعمال شدہ سرمایہ کاریکی مجموعی مالیت 60 ارب امریکی ڈالر ہے۔
سوم ، تعاون کے منصوبوں پر عمل درآمد کیا گیا ہے جس سے شراکت داری کے تعلقات مزیدمضبوط  ہوئے ہیں۔چوتھا ، ایک میکانزم پلیٹفارم قائم کیا گیا ہے ، جس سے کھلے تعاون کےلیے وسیع گنجائش پیدا ہوئی ہے۔ تاحال 172 ممالک اور عالمی تنظیموں نے چین کے ساتھ "بیلٹ اینڈ روڈ” کی مشترکہ تعمیر کے لیے تعاون کی 200 سے زائد دستاویزات پر دستخط کیے ہیں۔انسداد وبا کے حوالے سے تعاون پانچویں موثرکامیابی ثابت ہوئی ہے، جس سے بنی نوغ انسانکے ہم نصیب معاشرے کی تعمیر کے لیے ٹھوستجربات کی عکاسی ہوتی ہے۔

%d bloggers like this: