Official Web

آئی ٹی کے فروغ سے معاشی استحکام حاصل ہوگا، صدر

اسلام آباد: (مانیٹرنگ ڈیسک) صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے ملک میں نوجوانوں کی صلاحیتوں کو بروئے کار لانے کے لئے ڈیجیٹل روابط اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کے فروغ کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے معاشی استحکام سمیت ملکی ضروریات کو پورا کرنے میں مدد ملے گی۔ان خیالات کا ا ظہار انہوں نے ہائر ایجوکیشن کمیشن کے زیر اہتمام 51 ویں ایشین پیسیفک ایڈوانسڈ نیٹ ورک کے افتتاحی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ صدر مملکت نے کہا کہ ڈیجیٹل کمیونیکیشن اہمیت کی حامل ہے تاہم کورونا وبا کے دوران اس کی اہمیت میں مزید اضافہ ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ دنیا بھر کی طرح پاکستان میں انفارمیشن ٹیکنالوجی کو اپنانا اہم ہے۔ پاکستان نے انسانی سرمایہ کاری اور ٹیکنالوجی میں سرمایہ کاری کی دو جہتی حکمت عملی طے کی ہے جس کے لئے 2003ئ میں ٹیلی کمیونیکیشن سیکٹر کے لئے جامع لبرل پالیسی اختیار کی گئی۔ان کا کہنا تھا کہ موثر روابط اور ہر قسم کی معلومات کی بلاامتیاز فراہمی اہم ہے تاہم آج یہ انتہائی اہمیت اختیار کر چکی ہے۔ صدر مملکت نے 2006ئ میں چین میں اپنے خطاب کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ انہوں نے تعلیم تک آسان اور سستی رسائی کے لئے فاصلاتی تعلیم کی تجویز دی تھی۔ پاکستان میں اس وقت 3 لاکھ سے زائد انگریزی بولنے والے آئی ٹی ماہرین ہیں جس کی وجہ سے زبان کا کوئی مسئلہ نہیں ہے۔ حکومت اس شعبہ کی ماہرین کو مراعات دے رہی ہے جبکہ آئی ٹی کی سرمایہ کاری کے لئے 13 سافٹ ویئر ٹیکنالوجی پارک قائم کئے گئے ہیں۔