Official Web

سال 2020 میں چینی زرمبادلہ کے ذخائر میں ایک کھرب آٹھ ارب ساٹھ کروڑ امریکی ڈالر کا اضاف

سات تاریخ کو چین کی اسٹیٹ ایڈمنسٹریشن آف فارن ایکسچینج  کی جانب سے جاری  اعدادو شمار کے مطابقدسمبر   2020 تک  چین کے  زرمبادلہ کے ذخائر  بتیسکھرب سولہ ارب پچاس کروڑ امریکی ڈالر تک پہنچ چکے تھے  اور نومبر کے مقابلے میں ان میں اڑتیس  اربامریکی ڈالر ، یعنی  ایک اعشاریہ دو فیصد کا اضافہ ہوا تھا۔
اسٹیٹ ایڈمنسٹریشن آف فارن ایکسچینج   کی ڈیپٹی ڈائریکٹر اور ترجمان وانگ چھون انگ نے کہا کہ گزشتہ سال کے ماہ دسمبر میں  چین  میں زرمبادلہ کی منڈی  مجموعی طور پرمستحکم تھی ۔ وباکے اثرات اور  بڑے ممالک کی مالیاتی پالیسیوں کی وجہ سے  امریکی ڈالر  انڈیکس گر گیا اسلئے ڈالر کے مقابلے میں دیگر غیر ملکی کرنسیوں اور بڑے قومی اثاثوں کی قیمتیں بڑھ گئیں ۔
مین شنگ بینک کے چیف محقق وین بین کا کہنا تھا کہ   تشخیص میں بدلاؤ زرمبادلہ کے ذخائر کے پیمانے میں اضافہ کا باعث بنا ہے۔ اگلے مرحلے میں چین کے زرمبادلہ کے ذخائر کا استحکام برقرار رہے گا۔ چونکہ چینکی معاشی بحالی میں  بہتری آئی ہے  جو  زرمبادلہ کے ذخائر  کے استحکام کے لئے مضبوط بنیاد فراہم کرتی ہے اور چین کے  قومی نظام  اورغیر ملکی زرمبادلہ  کی پالیسیاور  زرمبادلہ کے ذخائر  کے استحکام کے لئے  یقیندہانی  فراہم کرتی ہے۔