Official Web

مودی یا ٹرمپ کیلئے نہیں، پاکستان بچانے کیلئے دہشت گردی کا خاتمہ کرنا ہے، بلاول

ڈیووس: پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے چئیرمین بلاول بھٹو زداری کا کہنا ہے کہ ہمیں مودی یا ٹرمپ کے لیے نہیں بلکہ پاکستان کو بچانے کے لیے دہشت گردی اور انتہا پسندی کا خاتمہ کرنا ہے۔

ڈیووس میں عالمی اقتصادی فورم اجلاس کے موقع پر جیو نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ اگر نیشنل ایکشن پلان پر پوری طرح عمل کیا جائے تو دنیا کو ہم پر تنقید کرنے کا موقع نہیں ملےگا۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ جس طرح بھارتی وزیراعظم نریندر مودی، پاکستان کے خلاف بھارت کا موقف بھرپور انداز میں پیش کرتے ہیں، بالکل اسی طرح پاکستان کو بھی اپنا موقف دنیا کے سامنے پیش کرنا چاہیے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے رواں ماہ کے آغاز میں دیئے گئے پاکستان مخالف بیان کے تناظر میں بات کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں سب سے زیادہ قربانیاں دی ہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ اگر ہم نیشنل ایکشن پلان پر درست طریقے سے عمل کریں تو کسی کے بھی پاس پاکستان پر تنقید کرنے کا موقع نہیں رہے گا۔

یاد رہے کہ رواں ماہ یکم جنوری کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک بار پھر پاکستان کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے اپنے ٹوئٹر پیغام میں کہا تھا کہ امریکا نے گزشتہ 15 برسوں میں اسلام آباد کو احمقوں کی طرح 33 ارب ڈالر امداد کی مد میں دیے لیکن بدلے میں اسے جھوٹ اور دھوکہ ملا۔

دوسری جانب امریکا نے پاکستان کی 255 ملین ڈالرز (25 کروڑ 50 لاکھ ڈالر) یعنی 28 ارب روپے کی فوجی امداد پر پابندی بھی معطل کردی تھی۔

تاہم پاکستان نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے بیان کو افسوسناک قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ پاکستان نے دہشتگردی کے خلاف جنگ اپنے وسائل اور معیشت کی قیمت پر لڑی اور قربانیوں اور شہداء کے خاندانوں کے درد کا بےحسی سے مالی قدر سے موازنہ کرنا ممکن نہیں۔

بلاول بھٹو زرداری اِن دنوں سوئٹزرلینڈ کے شہر ڈیووس میں موجود ہیں، جہاں گذشتہ روز انہوں نے  ’جھوٹی خبریں اور حقیقی سیاست‘ کے عنوان سے ہونے والے سیشن میں شرکت کی تھی۔

اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے چیئرمین پیپلز پارٹی کا کہنا تھا کہ غلط معلومات اور جھوٹی خبریں جنگی محاذ کے آلات ہیں اور اِن کے خطرناک نتائج ہو سکتے ہیں۔

%d bloggers like this: