Official Web

متعدد ممالک کی انسانی حقوق کونسل میں سنکیانگ اور ہانگ کانگ سے متعلق چین کے موقف کی حمایت

پندرہ  ستمبر کو اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے 45 ویںاجلاس میں انسانی حقوق کے ہائی کمشنر کی رپورٹ پر عام بحثمیں ، متعدد ممالک کے نمائندوں نے ہانگ کانگ اور سنکیانگ سےمتعلق امور پر چین کی حمایت میں بات کی۔

وینزویلا کے نمائندے نے کہا کہ وہ دوہرے معیار اور انسانیحقوق کے مسئلے  پر سیاست کی سخت مخالفت کرتا ہے۔ ہانگکانگ خصوصی انتظامی علاقہ چین کا اٹوٹ حصہ ہے ، اور ہانگکانگ کے معاملات خالصتا  چین کے داخلی امور ہیں۔

برونڈی کے نمائندے نے کہا کہ برونڈی چین کے ہانگ کانگ خصوصی انتظامی علاقے کے قومی سلامتی قانون کے قیام  کاخیرمقدم کرتا ہے ، جو نہ صرف  “ایک ملک ، دو نظامکی حفاظتکرتاہے ،بلکہ  ہانگ کانگ کی طویل مدتی خوشحالی اور استحکام کوفروغ دینے کے لئےبھی مفید ہے ، اور ہانگ کانگ کے عوام کےانسانی حقوق کے تحفظ کے لئے موزوں ہے۔ برونڈی سنکیانگمیں دہشت گردی اور انتہا پسندی کے خلاف چین کی لڑائی کوسراہتا ہے اور سمجھتا ہے کہ متعلقہ اقدامات نے دہشت گردیپیدا کرنے کی وجوہات کو مؤثر طریقے سے ختم کردیا ہے۔

ایتھوپیا نے کہا کہ ہانگ کانگ کے معاملات چین کے داخلی امورہیں۔ ایتھوپیا ہانگ کانگ  خصوصی انتظامی علاقے میں چین کےایک ملک ، دو نظامکے نفاذ کی بھرپور حمایت کرتا ہے اوربعضممالک کی طرف سے انفرادی طور پر  انسانی حقوق کے معاملاتکی سیاست کاری اور ہانگ کانگ کے معاملات کے ذریعے چینکے اندرونی معاملات میں مداخلت کی مخالفت کرتا ہے۔