Official Web

مردان کی اسماء کے قاتل 11 روز بعد بھی قانون کی پکڑ میں نہ آسکے

آئی جی خیبرپختونخوا نے پنجاب حکام سے رابطہ کر لیا جبکہ جے آئی ٹی میں ایک ماہر نفسیات کو بھی شامل کر لیا گیا ہے۔

مردان:  اسماء قتل کیس 11 ویں روز میں داخل ہوگیا لیکن ملزم قانون کی گرفت میں نہ آسکا۔ فرانزک رپورٹ تاحال موصول نہ ہوئی۔ آئی جی خیبرپختونخوا نے پنجاب حکام سے رابطہ کر لیا جبکہ جے آئی ٹی میں ایک ماہر نفسیات کو بھی شامل کر لیا گیا ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ زینب کیس کے ملزم کی گرفتاری کے بعد اب اسماء کیس کے فرانزک رزلٹ کا شدت سے انتظار کیا جا رہا ہے۔ دوسری طرف 230 سے زائد افراد سے تفتیش کا پہلا مرحلہ مکمل ہو گیا ہے۔ ابتدائی پوچھ گچھ اور ڈی این اے کے نمونے حاصل کرنے کے بعد تمام زیر حراست افراد کو چھوڑ دیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق فرانزک رپورٹ آنے کے بعد مشکوک افراد کے نمونے کراس میچ کے لئے بجھوائے جائیں گے جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم آج اسماء کے رشتہ داروں سے پوچھ گچھ کریگی۔ ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر ڈاکٹر میاں سعید احمد کی طرف سے جاری کردہ ایک مختصر پریس نوٹ میں کہا گیا ہے کہ جے آئی ٹی میں ایک ماہر نفسیات کو بھی شامل کر لیا گیا ہے اور فرانزک رپورٹ آنے کے بعد مقتولہ بچی سے جنسی زیادتی کا حتمی فیصلہ کیا جائے گا۔

%d bloggers like this: