Official Web

پروفیسر حسن ظفر کی موت طبعی تھی، تجزیاتی رپورٹ

کراچی: ایم کیو ایم لندن کے رہنما پروفیسر حسن ظفر کی پراسرار موت کی وجہ بالاخر طبعی قرار دے دی گئی۔ کیمیکل تجزیاتی رپورٹ کے مطابق زہر خوانی کے شواہد نہیں ملے۔

ایم کیوایم لندن کے رہنما پروفیسر حسن ظفر کی موت کیسے ہوئی؟ پوسٹ مارٹم رپورٹ کے بعد کیمیائی تجزیاتی رپورٹ بھی تیار ہو گئی، جس میں موت کے طبعی ہونے کی تصدیق کر دی۔

رپورٹ کے مطابق غیر طبعی موت یا زہر خورانی کے شواہد نہیں ملے۔ بتایا گیا کہ پروفیسر حسن ظفر دل کے عارضے میں مبتلا تھے اور ان کا بائی پاس
بھی ہو چکا تھا۔ کیمیائی تجزیے کے لیے ان کے جسم کے مختلف اعضا کا معائنہ کیا گیا تھا۔

پوسٹ مارٹم رپورٹ میں بھی وجہ طبعی موت قرار دی گئی تھی جس کے بعد جسم کے مختلف اعضاء کو کیمیائی تجزے کے لیے بھیجوایا گیا تھا۔ موت کی وجہ آخر کار طبعی ہی قرار دی گئی تاہم ان کی لاش جس علاقے اور جس حالت میں ملی اس پر اب بھی سوالیہ نشان برقرار ہے۔