Official Web

شہبازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کرینگے: فواد

اسلام آباد: وفاقی حکومت نے شہبازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کے لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد میڈیا بریفنگ میں وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کہا کہ ’شہبازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کے لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کریں گے، شریف خاندان کا جو بندہ باہر گیا وہ واپس نہیں آیا‘۔

انہوں نے کہا ’حیران ہوں کہ شریف برادران کو میاں شریف کے اسپتال پر بھی اعتماد نہیں، یہ لوگ اتنے لمبے عرصے سے اقتدار میں رہے، علاج کے لیے لندن جانے کا کہیں تو نامناسب بات ہے‘۔

بلاول کے مارچ پر رد عمل

بلاول بھٹو زرداری کے ٹرین مارچ سے متعلق فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ ’بلاول نے 300 ٹکٹ خریدے اور خوشی کی بات ہے انہیں اتنے لوگ بھی مل گئے، بلاول نے پہلی بار پیسے دے کر 11 لاکھ روپے ٹکٹ کے ادا کیے، ان کی سرگرمی کا اچھا پہلو یہ ہےکہ انہیں پہلی بار ٹکٹ کے پیسے دینا پڑے‘۔

انہوں نے مزید کہا کہ ’مراد علی شاہ این ایف سی میں سندھ کا حصہ بڑھانے کا مطالبہ کررہے ہیں، میں نے اسد عمر سے کہا کہ پہلا حصہ لندن دبئی میں لگ گیا، اب اور بڑھانا ہے تو وہ بھی وہی لگنا ہے، پیسہ سندھ کے نام پر لیا جاتا ہے لیکن دبئی میں فلیٹ کھلتے ہیں، اب سندھ کے لوگ خود فیصلہ کریں ، سندھ کے وزیراعلیٰ اس میں کلیدی مجرم ہیں، سندھ کی حکومت جس طرح چلائی جارہی ہے وہاں کے ایم پی ایز کو سوچنا چاہیے، سندھ والوں کے حقوق پر غاصب ٹولہ بیٹھا ہے‘۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ ’یہ لوگ نیب کے ساتھ تعاون پر بھی تیار نہیں، یہ کہنا کہ وزیراعلیٰ کو کیوں پوچھا، ان کا کوئی بندہ ایسا نہیں جس سے نہ پوچھا جائے، بدقسمتی سے ان کے فرنٹ مین حکومت کی فرنٹ کرسیوں پر بیٹھے ہیں، پی ٹی آئی کے تین وزرا نے معمولی ایشوز پر استعفیٰ دیا، ان کے اسپیکر کی اخلاقی حالت یہ ہےکہ وہ گرفتار ہے اور اس کے لیے اسمبلی کا اجلاس بلا رہا ہےکہ کہیں اسے واپس جیل نہ جانا پڑے‘۔

وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ ’انہوں نے مرکزی ملزم شرجیل میمن کو پبلک اکاؤنٹس کمیٹی میں ڈال دیا، پی اے سی کا مذاق شہبازشریف سے شروع ہوا، ہمیں بعد میں سمجھ آیا کہ پیپلزپارٹی اتنی شدو مد سے شہبازشریف کے لیے کیوں فرمائش کررہی ہے، انہوں نے فریال تالپور اور شرجیل میمن کو پی اے سی میں ڈالنا تھا جس کے لیے انہوں نے شہباز شریف کا کندھا استعمال کیا‘۔

کرتار پور راہداری نومبر میں کھلے گی: فواد چوہدری

فواد چوہدری نے بتایا کہ کرتار پور راہداری نومبر میں کھلے گی، اس کے علاوہ کابینہ نے نئی سول ایوی ایشن پالیسی کی منظوری دی ہے، خواتین پائلٹ کی خصوصی حوصلہ افزائی کی جائے گی، سول ایوی ایشن خواتین پائلٹ کی فیس میں 4 لاکھ تک ادا کرے گی، شہری ہوا بازی نے اندرون ملک فضائی کرایوں میں کمی کی سفارش کی، پائلٹ کے لائسنس کی مدت بڑھاکر 5برس کردی گئی ہے۔

%d bloggers like this: