Official Web

سانحہ ماڈل ٹاؤن: شہبازشریف جے آئی ٹی کے سامنے پیش

لاہور: سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف سانحہ ماڈل ٹاؤن کی تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوگئے۔

سانحہ ماڈل ٹاؤن کی تحقیقات کرنے والی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) نے شہبازشریف کو آج بیان ریکارڈ کرانے کے لیے طلب کیا تھا۔

شہبازشریف جے آئی ٹی کو بیان ریکارڈ کرانے پہنچے جہاں ممبران چائلڈ پروٹیکشن بیورو میں سابق وزیراعلیٰ پنجاب کا بیان ریکارڈ کریں گے۔

سانحہ ماڈل ٹاؤن کی تحقیقات کرنے والی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کی سربراہی آئی جی موٹروے پولیس اے ڈی خواجہ کررہے ہیں جو سندھ پولیس کے سربراہ کی حیثیت سے بھی فرائض انجام دے چکے ہیں۔

واضح رہےکہ پنجاب پولیس نے سانحہ ماڈل ٹاؤن کے حوالے سے نوازشریف سے بھی جیل میں تفتیش کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

سانحہ ماڈل ٹاؤن کا پس منظر

یاد رہے کہ 17 جون 2014 کو مسلم لیگ (ن) کے دورِ حکومت میں لاہور کے علاقے ماڈل ٹاؤن میں پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری کی رہائش گاہ کے سامنے قائم تجاوزات کو ختم کرنے کے لیے پولیس کی جانب سے آپریشن کیا گیا۔

پی اے ٹی کے کارکنوں کی مزاحمت اور پولیس آپریشن کے نتیجے میں 14 افراد جاں بحق ہوئے جن میں خواتین بھی شامل تھیں جب کہ پولیس کی فائرنگ سے درجنوں افراد زخمی بھی ہوئے۔

%d bloggers like this: