Official Web

بائیڈن کا ایک بار پھر صدارتی انتخاب کی دوڑ سے باہر ہونے سے انکار

واشنگٹن : امریکی صدر جو بائیڈن نے 2024 کے صدارتی الیکشن کی دوڑ سے باہر ہونے سے انکار کردیا ہے۔

برطانوی خبر رساں ایجنسی کے مطابق صدر جو بائیڈن نے بدھ کو انتخابی مہم کے عملے کے ساتھ کالز اور ڈیموکریٹک قانون سازوں اور گورنروں کے ساتھ ملاقاتیں کیں ، اس دوران انہوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ کوئی مجھے باہر نہیں نکال رہا ، نہ میں دستبردار ہورہا۔

گرتی ہوئی ساکھ کو مدنظر رکھتے ہوئے امریکا کے صدر جو بائیڈن نے ڈیموکریٹ گورنروں سے ملاقات کی ہے۔

ڈیموکریٹک گورنرز ایسوسی ایشن کے سربراہ اور منی سوٹا کے گورنر ٹیم والز کی قیادت میں ملاقات کرنے والوں میں کیلیفورنیا کے گورنر گیون نیوسم اور دیگر شامل تھے۔

یہ ملاقات ایک ایسے وقت ہوئی جب ایک سروے کے مطابق ڈونلڈ ٹرمپ کی مقبولیت مسلسل بڑھ رہی ہے، ٹرمپ کی مقبولیت 49 فیصد جبکہ بائیڈن کی مقبولیت 43 فیصد ہے۔

دوسری جانب ڈیموکریٹک پارٹی سے تعلق رکھنے والے مختلف ریاستوں کے گورنروں کے ایک گروپ کا کہنا ہے کہ وہ صدر جو بائیڈن کے ساتھ کھڑے ہیں۔

یاد رہے کہ کچھ حامیوں نے گزشتہ ہفتے منعقد ہونے والے ٹرمپ کے ساتھ مباحثے کے بعد81 سالہ جو بائیڈن کے حوالے سے شکوک و شبہات کا اظہار کیا تھا ، اس مباحثے کے دوران جو بائیڈن کے جوابات واضح نہیں تھے اور وہ ہکلاہٹ کا بھی شکار رہے۔

امریکی شہریوں کو صدر کی عمر اور ان کی صحت کے بارے میں بہت سے خدشات لاحق ہیں تاہم جمعرات کے مباحثے میں ناقص کارکردگی نے ان خدشات کوتقویت دی ہے۔

واضح رہے کہ 2020 میں صدارتی انتخابات میں کامیابی کے بعد جوبائیڈن پہلے 78 برس کی عمر میں حلف اٹھانے والے پہلے معمر ترین صدر بنے تھے، دوسری مرتبہ انتخابات میں کامیابی کے بعد جو بائیڈن 86 برس کی عمر تک صدارتی ہاؤس میں رہیں گے۔