Official Web

⁠⁠⁠⁠⁠⁠⁠مزید ہلاکتوں کو روکنے کے لیے چین نے غزہ سے متعلق سلامتی کونسل کی قرارداد کے مسودے کے حق میں ووٹ دیا

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے رائے شماری کے ذریعے غزہ کی پٹی سے متعلق امریکہ کی جانب سے پیش کردہ قرارداد کی منظوری دی۔ اقوام متحدہ میں چین کے مستقل مندوب فو چھونگ نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں رائے شماری کے بعد ووٹنگ کی وضاحت میں کہا کہ قرارداد کے مسودے میں بہت سے ابہام موجود ہیں اور چین کو اب بھی جائز خدشات ہیں کہ آیا متعلقہ فریق جنگ بندی کے اقدام کو قبول کریں گے اور کیا تین مرحلوں پر مشتمل یہ معاہدہ  بلا رکاوٹ آگے بڑھ سکتا ہے۔ چین کے نمائندے نے کہا کہ قرارداد کے مسودے میں کہا گیا ہے کہ اگر مذاکرات کا پہلا مرحلہ چھ ہفتوں سے زیادہ جاری رہا تو جنگ بندی اس وقت تک جاری رہے گی جب تک مذاکرات جاری رہیں گے۔ چین سمجھتا ہے کہ اس کا مطلب یہ ہے کہ ایک بار جنگ بندی حاصل ہونے کے بعد  دشمنی کی بحالی نہیں ہوگی اور مستقل جنگ بندی فوری طور پر حاصل کی جائے گی۔ یہ چین اور سلامتی کونسل کے ارکان کی کئی ماہ سے مضبوط اپیل ہے اور یہ غزہ کے عوام کی بھی سب سے بڑی امید ہے جو شدید مصائب کا شکار ہیں۔ مزید ہلاکتوں کو روکنے اور انسانی تباہی کو کم کرنے کے لئے چین نے قرارداد کے مسودے کے حق میں ووٹ دیا۔

چینی نمائندے نے زور دے کر کہا کہ سلامتی کونسل کی تمام قراردادیں قانونی طور پر پابند ہیں۔انہوں نے کہا کہ چین غزہ میں جاری لڑائی کو جلد از جلد ختم کرنے اور فلسطین اسرائیل مسئلے کو  جلد از جلد دو ریاستی حل پر عمل درآمد کے صحیح راستے پر لانے کے لئے تمام فریقوں کے ساتھ مل کر کام کرتا رہے گا۔