Official Web

قرض اہداف کی پارلیمنٹ سے منظوری کے بعد آئی ایم ایف سے قرض پروگرام پر مذاکرات ہونگے

اسلام آباد: عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) سے نئے قرض پروگرام کے لیے مذاکرات کا آغاز  قرض اہداف کی پارلیمنٹ سے منظوری کے بعد ہوگا۔ 

ذرائع کے مطابق آئی ایم ایف  وفدکے ساتھ پاکستانی حکام کے  مذاکرات کا آج آخری دن ہے،  آئی ایم ایف وفد کے ارکان بغیر کسی اعلان کے آج  اور کل روانہ ہوجائیں گے جب کہ   آئی ایم ایف کے ساتھ حالیہ مذاکرات قرض پروگرام کے لیے نہیں تھے۔

ذرائع کا بتانا ہے کہ آئی ایم ایف نے پاکستان سے معیشت کے بارے ڈیٹا حاصل کیا اور ڈیٹا وصولی کی بعد معیشت کا جائزہ لےکربجٹ کے خدوخال پاکستانی حکام کو بتا دیے ہیں، نجکاری اور توانائی کے شعبے کی اصلاحات کے اہداف سے بھی پاکستانی حکام کوآگاہ کردیا گیا ہے، اگلےسال کےلیے ٹیکس وصولیوں اور ایف بی آر  اصلاحات کےلائحہ عمل سے بھی آگاہ کردیاگیا ہے۔

ذرائع  کا کہنا ہے کہ بجٹ اہداف اورخدوخال کی پارلیمنٹ سےمنظوری کے بعد مذاکرات شروع ہوں گے، یہ پہلی بارہوگا کہ پاکستان مذاکرات سے پہلے  آئی ایم ایف کے تمام مطالبات پر عملدرآمد شروع کردےگا یا  اہداف اور خدوخال کی پارلیمنٹ سے منظوری کراکے  ان پر عملدرآمدکی تاریخ کا  تعین کریگا۔

 ذرائع کا بتانا ہے کہ نئے قرض پروگرام کے لیے مذاکرات جون کے آخر میں شروع ہوں گے،  آئی ایم ایف اور  پاکستانی حکام کوشش کررہے ہیں کہ یکم جولائی سے  پہلے معاہدہ ہوجائے۔