Official Web

جوبائیڈن نے اسرائیلی بمباری میں شہید فلسطینیوں کی شہادتوں کو نسل کشی ماننے سے انکار کردیا

واشنگٹن: امریکی صدر جو بائیڈن نے اسرائیلی بمباری میں 35 ہزار سے زائد فلسطینیوں کی شہادتوں کو نسل کشی ماننے سے انکار کردیا۔

امریکی صدر جو بائیڈن نے کہا کہ غزہ میں جو کچھ ہو رہا ہے وہ نشل کشی نہیں ہےجب کہ انہوں نے عالمی فوجداری عدالت میں اسرائیلی وزیراعظم اور وزیر دفاع کے وارنٹ گرفتاری کی درخواست کو بھی مسترد کردیا۔

دوسری جانب اسرائیلی وزیراعظم نے وارنٹ گرفتاری کی درخواست احمقانہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ درخواست جنگ کے دوران اسرائیل کے ہاتھ باندھنے کی کوشش ہے۔

اسرائیلی وزیراعظم کےترجمان نے کہاکہ بین الاقوامی عدالت نے درخواست منظورکربھی لی تواطلاق اسرائیل کی سرزمین پرنہیں ہوسکتا، غزہ میں جانی نقصانات کاصحیح ڈیٹا معلوم نہیں ، 9 لاکھ شہریوں نے رفح سے انخلاء کردیا ہے، ہم رفح کو حماس کا آخری گڑھ سمجھتے ہیں۔

ادھر امریکی سینیٹ کمیٹی میں وزیرخارجہ کے بیان کے دوران فلسطین کے حامیوں نے مظاہرہ کیا اور انٹونی بلنکن کو اسرائیل کے ہاتھوں فلسطینیوں کے قتل عام میں ملوث قرار دیا۔