Official Web

چینی سائنسی ریسرچ ٹیم کے ارکان نے دنیا کی چھٹی بلند ترین چوٹی چھو اویو سر کر لی

یکم اکتوبر  کو صبح 9:15 منٹ پر چین کی  دوسری چھو اویو چوٹی کی  جامع سائنسی  ٹیم کے ارکان  کامیابی کے ساتھ 8201 میٹر بلند چھو اویو چوٹی پر پہنچے اور پہلی بار اس علاقے میں سائنسی تحقیقات  کیں۔ یہ پہلا موقع ہے کہ چین کی کسی سائنسی ریسرچ ٹیم نےعوامی جمہویہ چین کے قیام کے بعد ماؤنٹ ایورسٹ کے علاوہ 8,000 میٹر سے زیادہ بلند  چوٹی سر  کی ہے، اور یہ چھنگھائی-تبت سطح مرتفع ماحولیاتی تحفظ قانون کے باضابطہ نفاذ کے بعد منعقد ہونے والی پہلی جامع سائنسی مہم بھی ہے۔

 یکم اکتوبر چین کا قومی دن ہے ۔سائنسی تحقیقی مشن مکمل کرنے کے بعد سائنسی  ریسرچ ٹیم کے 18 ارکان نے چھو اویو چوٹی  پر چین کا قومی پرچم بھی   لہرا یا۔

چھو اویو چوٹی کی انتہائی اونچائی پر سائنسی ریسرچ مشن کے کمانڈر انچیف محقق ان باؤشنگ کے مطابق، یہ مہم چھو اویو  چوٹی کے علاقے میں کی جانے والی ایک اہم تاریخی سائنسی  سرگرمی ہے۔

%d bloggers like this: