Official Web

امریکی حکومت چین کے خلاف وسیع پیمانے پر سائبر جاسوسی کر رہی ہے: وزارت خارجہ

چینی وزارت خارجہ کے ترجمان وانگ وین بین سے  باقاعدہ پریس کانفرنس میں ایک رپورٹر نے سوال کیا کہ چین کی وزارت  قومی سلامتی  کی جانب سے 20 تاریخ کو "امریکی انٹیلی جنس ایجنسیوں کی جانب سے سائبر حملے اور چوری کے اہم ذرائع” جاری کیے گئے، جس میں چین کی امریکی سائبر چوری کو بے نقاب کیا گیا اور نشاندہی کی گئی کہ امریکی حکومت نے 2009 سے ہواوے  کمپنی کے ہیڈ کوارٹرز کے سرور کو ہیک کرنا شروع کر رکھا ہے اور اس کی نگرانی جاری ہے۔ چین کا اس بارے میں کیا تبصرہ ہے؟

وانگ وین بین نے کہا کہ ہم امریکی حکومت کے غیر ذمہ دارانہ رویے کی مذمت کرتے ہیں اور حقائق ایک بار پھر ظاہر کرتے ہیں کہ ایک طرف امریکی حکومت چین کے خلاف وسیع پیمانے پر سائبر جاسوسی کررہی ہے جس سے چین کی نیٹ ورک  سلامتی کو شدید خطرات لاحق  ہیں اور دوسری جانب امریکہ "چینی ہیکنگ تھیوری” کے نام پر  غلط معلومات تیار کرنا  اور پھیلانا جاری رکھے ہوئے ہے جو کہ ایک عام اور منافقانہ سیاسی ہیرا پھیری ہے۔

وانگ وین بین نے اس بات پر زور دیا کہ ہم امید کرتے ہیں کہ متعلقہ ممالک معروضی اور منصفانہ رویے کے ساتھ منصفانہ، کھلے، جامع اور غیر امتیازی کاروباری ماحول کو برقرار رکھیں گے۔

%d bloggers like this: