Official Web

ناگورنو کاراباخ کی صورتحال پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے اجلاس میں چین کا مذاکرات کے ذریعے تنازعات حل پر زور

کیس ستمبر کو  اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے ناگورنو کاراباخ  کی صورتحال پر ایک اجلاس منعقد کیا جس میں آذربائیجان اور آرمینیا کے وزرائے خارجہ نے شرکت کی۔ اقوام متحدہ میں چین کے نائب مستقل مندوب گنگ شوانگ نے آذربائیجان اور آرمینیا پر زور دیا ہے کہ وہ بات چیت اور مشاورت کے ذریعے تنازع کو حل کریں۔

 یورپ، وسطی ایشیا اور امریکہ کے امور  کے لیے اقوام متحدہ کے اسسٹنٹ سیکرٹری جنرل میرسلاو جینکا نے ناگورنو کاراباخ کی حالیہ صورتحال پر بریفنگ دی۔ انہوں نے تمام متعلقہ فریقوں پر زور دیا کہ وہ جنگ بندی سے متعلق پہلے سے طے شدہ  اتفاق رائے پر عمل درآمد کریں اور  انسانی ہمدردی کی بنیاد پر امداد کے لیے مکمل رسائی فراہم کریں۔

اقوام متحدہ میں چین کے نائب مستقل مندوب گنگ شوانگ نے اپنی تقریر میں نشاندہی کی کہ مذاکرات اور مشاورت کے ذریعے تنازعات کو حل کرنا دونوں ممالک کے بنیادی مفادات کے مطابق ہے اور یہ علاقائی امن و استحکام کو مشترکہ طور پر برقرار رکھنے کے لئے بھی سازگار ہے۔ چین باہمی اعتماد کو مسلسل بڑھانے اور عالمی سطح پر تسلیم شدہ بین الاقوامی قوانین اور  تعلقات کے اصولوں کے مطابق دونوں ممالک کے  درمیان  تنازعات کو مناسب طریقے سے حل کرنے میں دونوں فریقوں کی حمایت کرتا ہے  اور ان تمام سفارتی کوششوں کی بھی  حمایت کرتا ہے جو اس مقصد  اور اس سلسلے میں تعمیری کردار ادا کریں گی۔

%d bloggers like this: