Official Web

9 مئی کے واقعات میں ملوث عناصر کوقانون وآئین کے مطابق سزا ملے گی: وزیراعظم

پشاور:  وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ 9 مئی کے واقعات میں ملوث عناصر کوقانون وآئین کے مطابق سزا ملے گی۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف ایک روزہ دورے پر پشاور پہنچے جہاں انہوں نے ریڈیو پاکستان پشاور میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ریڈیو پاکستان کی تاریخی عمارت پر حملے سے ہم سب دکھی ہیں، یہ وہ تاریخی عمارت ہے جس میں پاکستان بننے سے قبل ریڈیو کا نظام موجود تھا۔

انہوں نے کہا کہ اسی عمارت سے 14 اگست 1947 کو آزادی کی صدائیں بلند ہوئیں، ریڈیو پاکستان پشاور نے ہی مملکت خداداد کی آزادی کا اعلان کیا، 9 اور 10 مئی کو دلخراش واقعات نے پاکستانی عوام کو رنجیدہ کیا۔

وزیرِ اعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ تاریخی اور قومی ورثے کو جلا دینا کہاں کی حب الوطنی ہے؟ چاغی کی یادگار کو بھی راکھ بنا دیا گیا، قومیں اپنی تاریخی ورثے اور شناخت کی حفاظت کرتی ہیں، یہاں جلا دیا گیا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ 100 سال کے ریکارڈ اور تاریخی ورثے کو تباہ کر دیا گیا، جن لوگوں نے یہ کام کیا ہے ان میں اور دہشت گردوں میں کوئی فرق نہیں، آج عہد کرتے ہیں کہ آئندہ ایسی جرات کوئی نہ کر سکے۔

ریڈیو پاکستان پشاور کے ملازمین کی تنخواہیں فی الفور ادا کرنے کا اعلان

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ ریڈیو پاکستان کے ملازمین کے حوصلے کو داد دیتا ہوں، فنڈز 48 گھنٹوں میں فراہم کر دئیے جائیں گے۔

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ اپریل اور مئی کی تنخواہوں کی فی الفور ادائیگی کا اعلان کرتا ہوں، 48 گھنٹوں میں وزارت اطلاعات کے ذریعے مئی کی تنخواہ مل جائے گی۔

تقریب میں وزیرِ اطلاعات مریم اورنگزیب، وزیر خزانہ اسحاق ڈار، گورنر خیبرپختونخوا غلام علی اور نگران وزیرِ اعلیٰ کے پی محمد اعظم خان بھی موجود تھے۔

مریم اورنگزیب

اس موقع پر مریم اورنگزیب نے کہا کہ مسلح جتھوں کو بالکل بھی رعایت نہیں دی جائے گی، 9 مئی دہرائی نہیں جا سکتی، ملوث افراد کو سخت سزا دیں گے، منصوبہ بندی کے تحت ریڈیو پاکستان پشاور کی عمارت پر حملہ کیا گیا۔

وفاقی وزیرِ اطلاعات کا کہنا تھا کہ شرپسندوں نے 10 مئی کو دوبارہ انتظامات کے ساتھ حملہ کیا، تاریخی آرکائیوز جس کی کوئی قیمت نہیں تھی جلا دیا گیا، عمارت کو بچاتے ہوئے عملے کے کئی افراد شدید زخمی ہوئے۔