Official Web

حکومت کے پاس چینی اور آٹے کی قیمتوں میں اضافے کا کوئی جواب نہیں، شاہد خاقان

1

اسلام آباد:  سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ حکومت ملکی معیشیت کی جو تصویر دکھا رہی ہے عوام اس سے بے خبر ہیں، ماضی میں چینی 43 روپے کلو تھی، آج 90 تک پہنچ گئی۔ آٹے اور چینی کی قمیت میں اضافے کا حکومت کے پاس کوئی جواب نہیں۔

قومی اسمبلی اجلاس سے خطاب کے دوران حکومت پر تنقید کرتے ہوئے ن لیگی رہنما شاہد خاقان کا کہنا تھا کہ ایک وزیر نے بیان دیا کہ موسمیاتی تبدیلی کے سبب آٹا مہنگا ہوا، ایک خاتون وزیر نے اسلام آباد سے شاپنگ بیگ ختم کر دیئے، فواد چودھری ہمیں چاند پر لے کر جائیں گے، ہم اس کا انتظار کر رہے ہیں، کسی ایک وزیر کی کارکردگی دکھا دیں۔ ان وزرا کی تقاریر سن لیں، کیا اس طرح ملک چلے گا۔

انہوں نے کہا کہ قرض لے کر گزارہ کیا جا رہا ہے، موجودہ حکومت نے 5 سال پورے کر لئے تو قرضہ دگنا ہو چکا ہو گا۔ بجلی اور گیس کی قیمتیں کہاں تک پہنچ گئی ہیں۔ آٹے اور چینی کے بحران پر خصوصی کمیٹی بنائی جائے، آئین کہتا ہے بجلی اور گیس کے معاملات صوبوں کے حوالے کر دیں۔ انہوں نے مہنگائی کے معاملے پر حکومت کو وارننگ دیتے ہوئے کہا کہ عوام سڑکوں پر نکل آئے تو جگہ نہیں ملے گی۔